دلچسپ اور عجیب حقائق -مفت معلومات

دلچسپ و عجیب حقائق

حضرتِ انسان کی آمد سے لے کر اب تک بُہت کچھ دریافت اور ایجاد ہوا ہے۔ ہر انسان میں کھوجنے کا مادہ پایا جاتا ہے۔ جس کی مدد سے انسان نے ترقی کی منازل طے کی ہیں۔ ہر آنے والا دن ایک نئی امید لے کر آتا ہے۔دُنیا میں کچھ ایسے واقعات رونما ہوتے ہیں۔جن سے ہر کوئی باخبر نہیں ہوتا۔ کچھ ایسے ہی واقعات کی کھوج لگائی گئی ہے۔ تا کہ جو لوگ ابھی تک بے خبر ہیں۔ان کو باخبر کیا جائے۔ان میں سے چند حقائق درج ذیل ہیں۔جو اپنی نوعیت کے حساب سے دلچسپ بھی ہیں اور عجیب بھی:

نمبر 1۔ دنیا میں ہر ملک کا اپنا جھنڈا ہے ۔ جو کے اس ملک کی پہچان ہے۔ لیکن اگر تمام جھنڈوں کو سامنے رکھا جائے ۔ تو ان میں سے کسی بھی جھنڈے میں جامنی رنگ کا استعمال نہیں ہو گا۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ انیسویں صدی سے پہلے جامنی رنگ بُہت ہی نایاب تھا ۔جو تھوڑا بُہت رنگ حاصل بھی کیا جاتا تھا ۔وہ ہزاروں سمندری گھونگھوں سے حاصل کی جاتا تھا۔اس لیے یہ رنگ بُہت قیمتی تھا ۔لیکن اب اس کا استعمال دو ملکوں ڈومینیکا اور نیکاراگوا کے جھنڈوں میں ہوا ہے ۔

نمبر 2۔ جب گاڑیاں وجود میں آئیں۔ تو پچھلی جانب بڑے شیشے کے ساتھ ایک چھوٹا شیشہ ہوتا جس کو ہوا کے لئے استعمال کیا جاتا تھا۔ یہ انیس سو پچاس میں لگایا گیا تا کہ ہوا گاڑی میں وقتاً فوقتاً داخل ہوتی رہے ۔اور گاڑی گھٹن زدہ نہ ہو ۔اور تب سے لے کر اب تک یہ گاڑیوں کے ڈیزائن کا حصہ بن چکا ہے ۔ لیکن چونکہ وقت بدل چکا ہے۔ اب گاڑیوں میں ان شیشوں کی جگہ اے سی نے لے لی ہے۔اور نئے آنے والے ڈیزائن میں ان کو ختم کر دیا گیا ہے۔

نمبر 3۔ دُنیا کی آبادی ساڑھے سات ارب ہے۔ لیکن انسانوں کی آبادی سے بھی زیادہ آبادی چونٹیوں کی ہے ۔ویسے تو ایک چیونٹی کا وزن نہ ہونے کے برابر ہے ۔ لیکن اگر ان کو اکھٹا کر کے ان کا وزن کیا جائے تو ان کا وزن انسانوں کے ہم وزن ہو گا۔

نمبر 4۔ دُنیا میں ہر روز ہر سیکنڈ میں چار بچے پیدا ہوتے ہیں۔اس لحاظ سے ہر منٹ میں دو سو چالیس اور ہر دن تین لاکھ ساٹھ ہزار نئے بچے پیدا ہوتے ہیں۔جبکہ ہرمنٹ میں ایک سو پانچ لوگ مرتے ہیں۔ اور ہر دن ایک لاکھ اکاون ہزار سے زیادہ لوگ اس دُنیا سے کوچ کر جاتے ہیں۔

نمبر 5۔ نیوزیلینڈ ایک ایسا ملک ہے جہاں پالتو جانوروں کی گھروں میں رکھنے کی شرح سب سے زیادہ ہے ۔ان پالتو جانوروں میں بلی اور مختلف نسلوں کے کتے سر فہرست ہیں ۔ اس ملک میں اڑسٹھ فیصد لوگوں کے گھروں میں یہ جانور موجود ہیں۔

نمبر 6۔ انگوٹھے کے پرنٹ کا استعمال بُہت عرصہ پہلے سے کیا جا رہا ہے۔ جدید آلات سے قبل بھی اس کا استعمال تھا۔ اور جدید ٹینولوجی کے آنے کے باوجود اس کہ استعمال جاری ہے بلکہ اس کا استعمال بڑھ گیا ہے۔ اسمارٹ فونز کو لوک کرنا ہو تو انگوٹھے یا کسی بھی فنگر پرنٹ کا استعمال کیا جاتا ہے ۔دُنیا میں ہر انسان کا فنگر پرنٹ مختلف ہے ۔ اسی طرح ہماری زبان بھی الگ پرنٹ رکھتی ہے ۔ اور زبان کا پرنٹ بھی ہر انسان میں مختلف ہے۔

نمبر 7۔ آج سے کچھ سال قبل پلوٹو سیارے کو سولر سسٹم سے نکال دیا گیا تھا ۔اس لیے اب اسے سیارہ نہیں کہہ سکتے۔ یہ زمین سے پانچ ارب کلو میٹر دور ہے۔ زمین سے پلوٹو تک کا سفر آٹھ سو سال پر محیط ہے۔

نمبر 8۔ کائنات میں ہونے والی واقعات نے انسان کو حیرت میں مبتلا کر رکھا ہے ۔ اس کائنات میں ایسی ہی دو سیارے ہیں جہاں ہر سال دو لاکھ پاؤنڈ سے زائد ہیروں کی بارش ہوتی ہے۔ جوپیٹر اور سرٹن وہ سیارے ہیں جہاں کاربن آئٹمز کرسٹلائزڈ ہو کر ہیرے بن جاتے ہیں۔

نمبر 9۔ ہر ملک نے اپنی حفاظت کے لیے کوئی نے کوئی انتظام کر رکھا ہے ۔ یہ انتظام army کی صورت میں ہے۔ army کا لفظ لاطینی زبان کے لفظ ارماڈا سی نکلا ہے ۔ (Alert Regular Mobility Young)ARMY کا مخفف ہے۔

نمبر 10۔ Coca cola ایسا مشروب ہے جو ہر جگہ پایا جاتا ہے۔ سوائے دو ممالک کے جن میں شمالی کوریا اور کیوبا شامل ہیں۔کیوبا پر امریکا کی پابندی عائد تھی جس کی وجہ سے coca cola وہاں نہیں پُہنچ سکی ۔پابندی کے ختم ہونے کے باوجود ابھی تک کیوبا میں یہ مشروب نہیں پیا جاتا اور نا ہی پایا جاتا ہے۔

نمبر 11۔ پانڈا چین کی پہچان ہے ۔ پانڈا کے لیے چین بُہت محتاط ثابت ہوا ہے ۔ جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کے چین دس سال کے لیے اپنے پانڈا کو کرائے پر دیتا ہے لیکن یہ پانڈا چین ہی کی ملکیت میں ہوتا ہے۔

نمبر 12۔ ویسے تو دُنیا میں بُہت سی جنگیں لڑی گئیں ہیں۔اور ان جنگوں کا دورانیہ بُہت ہی لمبا رہا ہے ۔ لیکن دُنیا کے خطے پر دو ایسے ملک بھی اُبھریں ہیں جن میں جنگ صرف اڑتیس منٹ کے لیے رہی ۔ یہ جنگ 27 اگست 1896 میں برطانیہ اور زنزیبار کے درمیان ہوئی۔ اس جنگ کو “The Anglo zenzibar war” کے نام سے جانا جاتا ہے۔

نمبر 13۔ اگر چوہے کو گُدگُدی کی جائے۔ تو وہ بھی ہستا ہے ۔چوہے کے اندر ہنسنے کی صلاحیت مجود ہے۔

نمبر 14۔ قد کا بڑا چھوٹا ہونا قدرتی بات ہے ۔لیکن انڈونیشیا اور بولیویا ایسے ملک ہیں جہاں لوگوں کی قد دُنیا میں سب سے چھوٹے ہیں۔ جب کہ نیدر لینڈ میں لوگوں کے قد اوسطاً لمبے ریکارڈ کیے گے ہیں۔

نمبر 15۔ زمین پر اور دُنیا کے نقشے میں سب سے نو جوان کہا جائے تو درست ہو گا۔ جنوبی سویڈن تازہ ترین دُنیا کے نقشے پر وجود میں آنے والا ملک ہے ۔ یہ 2011 میں وجود میں آیا ۔

از قلم : عائشہ عظیم

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.