سردیوں میں سکن کی حفاظت

 سردیوں میں سکن کی حفاظت

 سردیوں میں سکن کی حفاظت
سردیوں کی آمد آمد ہے۔ جہاں موسم میں خوشگوار تبدیلی آئی ہے۔ وہیں موسم میں آنے والی

شدت کے لیے تیاری بھی ضروری ہے۔ موسم میں شدت کا سامنا ہمارے جسم کے بیرونی اعضا کو زیادہ کرنا پڑتا ہے۔

ان میں ہاتھ, پاؤں اور چہرہ سرفہرست ہیں۔ موسم کا اثر ان پر زیادہ ہوتا ہے۔ سردیوں کے شروع میں ہی ٹھنڈی اور خشک ہواؤں کا نہ رکنے والا والا سلسلہ شروع ہو جاتا ہے۔ اور اس کا زیادہ اثر ہمارے منہ ،ہاتھ اور پاؤں پر ہوتا ہے ۔ ان سے بچنے کے لئے بُہت آسان اور آزمودہ نسخے بھی ہیں ۔ جو کہ مرد ہو یا عورت سب کے لیے قابل استعمال ہے۔ اور ہر شخص کی پُہنچ میں بھی ہے۔ بعض اوقات ایسے ایسے نسخے/ ٹپس بتائی جاتی ہیں۔ جو عام شخص کی پُہنچ سے بُہت دور ہوتی ہیں۔ کیونکہ ہمارے ہاں زیادہ تر لوگ ابتدائی اور ثانوی درجے کی زندگی گزار رہے ہیں۔

ایسی صورتحال میں نواں اقسام کی کریموں پر پیسے خرچ کرنا بیوقوفی کے مترادف ہے ۔ لیکن پھر بھی اپنا خیال اچھے سے رکھنا اور وہ بھی بہت کم پیسوں میں بُہت عمدہ ہے۔ ہر کوئی خوبصورت دکھنا چاہتا ہے۔ جب کے سردیاں ساری حسن پے خشکی پھیر دیتی ہیں۔ ایسے میں کچھ آسان نسخے میرے پڑھنےوالوں کے لیے ،

نمبر 1: کوشش کریں پانی زیادہ پیا جائے ۔ سردیوں میں پانی کا کم استعمال بھی ہماری سکن کے خشک ہونے کی وجہ بنتا ہے ۔ اس لیے کوشش کریں کے پانی کا استعمال تھوڑا سا زیادہ کر لیں۔ مشکل تو ہوتا ہے سردیوں میں ٹھنڈا ٹھار پانی پینا۔
نمبر 2-منہ کو دن میں دھو بار ضرور دھوئیں۔ اگرچہ سردیوں میں منہ دھونا محاذ فتح کرنے کے مترادف ہے۔
نمبر 3:۔ سردیوں میں نہانا بھی جواں مردی کا کام ہے۔لیکن گرم پانی نے اس مسلے کو حل کر دیا ہے ۔ اور لوگ با آسانی اس كام میں سرخرو ہو جاتے ہیں۔ لیکن یہ گرم پانی ہمارے جسم میں سے چکنائی/ آئل کو ختم بھی کرتا ہے۔ جس کے باعث ہماری جلد خشک ہو جاتی ہے۔
نمبر 4:۔ گلیسرین، عرق گلاب اور لیموں کا محلول تّیار کر کے رکھیں۔ اور روزانہ رات سونے سے قبل استعمال کریں۔ اس کے متواتر استعمال سے خشکی کا مسئلہ بُہت حد تک ختم ہو جاتا ہے۔ اور جلد نرم و ملائم رہتی ہے۔ اس کا استعمال ہاتھوں اور منہ پر کیا جاتا ہے۔ اگر لیموں آپکی سکن کو سوٹ کرتا ہے تو اس کا استعمال کریں ورنہ رہنے دیں۔
نمبر 5:۔ سردیوں کی آمد کے ساتھ ہی ہونٹوں پر نہایت مضر اثرات پڑتے ہیں۔ ہونٹ خشک ہو جاتے ہیں ۔ان میں دراڑیں پر جاتی ہیں۔ اور ان سے خون بھی نکل آتا ہے۔ ہونٹوں کا پھٹ جانا ایک تکلیف ده عمل ہے۔ گلیسرین اور کسی بھی چپسٹک کا مسلسل استعمال ہونٹوں کی تکلیف میں راحت کا باعث بنتا ہے۔
نمبر 6:۔ سردیوں میں ایڑیوں کا پھٹ جانا بھی بُہت عام ہے۔ اس لیے رات کو سونے سے قبل کسی بھی پیٹرولیم جیل کا استعمال ضرور کریں۔
نمبر 7:۔ خشک سکن والے لپیڈ بیسڈ موسچرائزر استعمال کریں۔ اور چکنائی / آئلی سکن والے واٹر بیسڈ موسچرائزر استعمال کریں۔ ہر انسان کی سکن مختلف ہوتی ہے۔ اس لیے جو موسچرائزر آپ کو سوٹ کرتا ہے آپ وہ استعمال کریں۔

گرم اور خشک کھانے کی چیزوں کا استعمال بھی ہمارے جسم میں خشکی کا باعث بنتا ہے۔
نوٹ:۔ ہر موسم کا اپنے وقت پر آنا اس بات کی دلیل ہے ۔ کہ کوئی ہے جو اس نظام کو چلا رہا ہے۔ اور اس کا شکریہ ادا کرنا ہم پر فرض ہے۔ ایک کے بعد جب دوسرا موسم آتا ہے۔ تو اپنے ساتھ خوشگوار اور تھوڑی سی غیر خوشگوار تبدیلیاں بھی لاتا ہے۔ یہ تبدیلیاں انسانی صحت پر جہاں اچھی اثرات مرتب کرتی ہیں وہیں انسان مختلف چھوٹی چھوٹی بیماریوں کا بھی شکار ہوتا ہے ۔ ان سے نمٹنا ہی انسان کے حق میں بہتر ثابت ہوتا ہے۔ تغیر انسانی بقا کے لیے اہم ہے۔
از قلم:۔ عائشہ عظیم

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.