عمر شریف کی عوام اور وزیراعظم سے اپیل – مفت معلومات

عمر شریف کی عوام اور وزیراعظم سے اپیل
لوگوں کے چہرے پر ہنسی سجانے والا ،خود اب ویل چیر پر
ملک کے نامور اور لیجنڈری کامیڈین عمر شریف کی ایک تصویر ویل چیر پر وائرل ہوئی جسے دیکھ کر ان کے مداحوں کو بہت افسوس ہوا۔
عمر شریف جو پچھلی چار دہائیوں سے لوگوں کے چہروں پر مسکراہٹیں بکھیرتے رہے ہیں ۔انہیں گاڈ آف کامیڈی کہا گیا ۔ تو کبھی کامیڈی کنگ ۔مزاح میں وہ اپنے دور کے جتنے بھی کامیڈین رہے ان سے منفرد ہی انداز کے مالک رہے ہیں جسے ہمیشہ

سٹینڈنگ اویشن ملتا رہا ۔جس نے کرداری مزاح متعارف کروایا ۔
انھوں نے 1974ء میں تھیٹر سے آغاز کیا اور آتے ہی چھا گیا ۔ بکرا قسطوں پہ ،اور بڈھا گھر پہ ہے جیسے مزاحیہ ڈراموں سے شہرت ملی ۔کامیڈی کے ساتھ ساتھ اداکاری بھی کی ،پروڈیوسر بھی رہے ،فلمسازی بھی کی ۔نگار ایوارڈ اور ستارہ امتیاز دیا گیا ۔جسےپاکستان میں ہی نہیں پاکستان سے باہر بھی بہت پسند کیا جاتا رہا خاص طور پر انڈیا میں،
لوگوں میں پیار بانٹنے والا یہ شخص اپنی ذاتی زندگی میں بہت سی پریشانیوں کا شکار رہا مگر کبھی

کسی کو اپنی پریشانی کا احساس نہ ہونے دیا ۔اور ہمیشہ مسکراتا رہا ۔آج وہی عمر شریف ویل چیر پر ہے ۔ دوسری بیوی اختلافات کی وجہ سے علیحدگی ،پھر جواں سالہ بیٹی کی اچانک موت، پھر کروڑوں روپے لون پر خریدہ ہوا اپارٹمنٹ تیسری بیوی نے ان کی بیماری سے فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنے نام لگوا لیا ۔
عمر شریف جو کہ بلڈ پریشر اور شوگر کی بیماری پا لے ہوئے تھا وقت کے ساتھ تو وہ بڑھتی گئی لیکن ایک بیماری بھی انہیں لاحق ہو گئی تھی وہ ہے ڈئمینشیا کی بیماری ،اس بیماری میں انسان کچھ دیر کے لیے سب کچھ بھول جاتا ہے ۔یعنی شارٹ ٹائم

میموری لاس ہوتا ہے ۔مریض میں چڑچڑاپن اور غصہ بہت زیادہ آجاتا ہے ،وہ اپنی فیملی ملنے جلنے والے سب کے نام اور تعلق بھول جاتا ہے ۔یہاں تک کے راستہ بھی بھول جاتا ہے ۔اور اگر مریض کو ذیابیطس یا موٹاپا ہو تو اس بیماری کی علامات اور بھی شدید ہو جاتی ہیں ۔
اسی طرح کی حالت میں ان کی بیوی نے ان سے اپارٹمنٹ کے کاغذات سائن کروائے ۔پھر جب ان کی یاداشت واپس آئی تو ان کو یہ سب معلوم ہوا کیونکہ ان کی بیوی وہ جائیداد بیچنے جا رہی تھی ۔جس پر عمر شریف نے اس کے خلاف مقدمہ درج کروایا ۔ جس کا بعد میں ان کی بیماری کو

مدنظر رکھتے ہوئے ان کے حق میں فیصلہ ہوا۔
اس وقت عمر شریف ہسپتال میں داخل ہیںکمزوری کی وجہ سے چلنے پھرنے سے قاصر ہیں اور ڈاکٹرز نے انہیں 20 دن کا وقت دیا ہے کہ آپ بہترین علاج کے لیے بیرون ملک چلے جائیں ۔کیونکہ اس بیماری کا علاج امریکہ ،سعودی عرب اور جرمنی میں ہوتا ہے ۔
عمر شریف نے ہسپتال سے وزیراعظم عمران خان کے نام ایک پیغام ریکارڈ کروایا ہے جس میں اپیل کی ہے کہ انہیں علاج کے لیے ملک سے باہر بھیجنے کا انتظام کیا جائے تا کہ ان کا علاج ہو سکے ۔ ان کا کہنا ہے کہ

شوکت خانم ہسپتال کے لے چندہ اکٹھا کرنے میں جس طرح میں نے عمران خان صاحب کی آواز پر ہمیشہ لبیک کہا تو آج امید کرتا ہوں کہ میرح اپیل پر بھی لبیک کہا جائے گا ۔کیونکہ دنیا بھر میں کووڈ کی وجہ سے سفری پابندیاں ہیں تو ایسے میں گورنمنٹ سے اپیل ہے کہ ان کے جانے کا انتظام کرے ۔اور اگر فنانشل مدد درکار ہے تو بھی اس لیجنڈ کو دے ۔ عوام کی محبتیں بھی ان کے ساتھ اتنی ہیں کہ عوام کھلے دل سے اپنے اس لیجنڈ کو فنانشلی سپورٹ کر دے گی ۔
ہماری بھی گورنمنٹ سے اپیل ہے کہ جتنا جلد ممکن ہو اس فنکار کو یہ

سہولت دی جائے جس نے ایک عمر اپنے لوگوں کو پیار دیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.