عورتوں کی بیماری کثرت حیض کا علاج

Treatment of menstrual cramps muft malomat

یہ بیماری اکثر خواتین کو ہو جاتی ہے اس میں کبھی کبھی ماہواری یا حیض

میں بہت زیادہ خون کا ڈسچارج کئی دنوں تک ہوتا رہتا ہے اور کسی خاتون کو

تو یہ سلسلہ زیادہ ہی ہو جاتا ہے ایسی خواتین کی چارپائی کے پائوں کی طرف

دونوں پائوں کے نیچے ایک اینٹ رک کر پاؤں کا حصہ اونچا کر کے سہلائیں

یعنی سر اور جسم کا حصہ نیچے کی طرف ہو تیل مرچ اور گرم مزاج کی

چیزیں کھانے کو نہ دے ٹھنڈے مشروب لے گرم ماحول اور باورچی خانے

میں بالکل نہ جائیں۔

 

دھنیا 20 گرام دھنیا 20 گرام پانی میں ملا کر ابال لیں جب پانی 50 گرام رہ

جائے تو چھان کر مصری ملا کر پلائیں اس عمل سے ماہواری کی زیادتی رک

جاتی ہے انار کے پتے اور خشک چھلکے پیس کر چھان لیں ایک چمچ ٹھنڈے

پانی کے ساتھ استعمال کرنے سے خون کا ڈسچارج بند ہو جاتا ہے پسا ہوا

خشک دھنیا دیسی گھی اور چینی ہموزن دو چمچ دن میں تین بار کھانے سے

خون کی زیادتی ختم ہو جاتی ہے

 

 حیض کی قلت کو دور کرنا     

   

حیض ماہواری کا نہ ہونا ہے جس کی قلت کہلاتا ہے اس کی کی وجہ ہو

سکتی ہیں مقامی تولیدی اعضاء کے امراض بچہ دانی کا نہ ہونا تولیدی اور

دوسرے اندرونی اعضاء کا ارتفع نہ ہونا اور جسم کے مختلف ہارمونز کا

متوازن نہ بیٹھنا وغیرہ شامل ہیں۔

بچے کی پیدائش کے کچھ مہینوں بعد تک ماہواری تقریبا بند رہتی ہے ہے

 

ذہنی الجھن خون کی کمی خیالات کا بوجھ ماہواری سے پہلے یا بعد میں

ٹھنڈ کا لگ جانا پانی میں بھیگنا وغیرہ ہے اس کی قلت کا سبب بنتی ہیں ہیلتھ

کی قلت کی وجہ سے مینوپاز علاج سے پہلے وجوہات کا جائزہ لیں اور انہیں

دور کریں ذیل میں چند ہی چٹکلے تحریر کیے جا رہے ہیں ان سے بھرپور استفادہ

کیا جا سکتا ہے ۔ اجوائن چھ گرام اجوائن کا چورن دن میں دو بار گرم دودھ سے

استعمال کریں رکی ہوئی ماہواری درست ہو جائے گی۔

 

تلسی کے بیج ایک چمچ ایک گلاس پانی میں ابال کر آدھا پانی

رہنے پر پینے سے ماہواری آنے لگے گی

سیاہ تل اور گڑ دونوں اشیاء 10 گرام لے کر دونوں کو پانی میں ابال کرچھان

لیں ٹھنڈا ہونے پر روزانہ پئے کچھ دن پیتے رہنے سے بند ہوئی

ماہواری دوبارہ سے شروع ہو جائے گی ۔

مولی کے بیج گاجر کے بیج اور دانہ میتھی برابر مقدار میں پیس کر

گرم پانی سے پھانک لیں بند ماہواری کھل کر آنے لگے گی مرض یا بیماری ختم ہونے پر علاج بھی ختم کر دیں

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.