فیس بک انسٹنٹ آرٹیکل سے لوگ کیسے لاکھوں روپے کما رہے ہیں

UrduDesigner-1611403710783

پاکستان میں بھی لوگوں نے فیس بک انسٹنٹ آرٹیکلز پر بزنس شروع کر دیا ہے ۔

کچھ لوگ تو انسٹنٹ آرٹیکلز کی ویب سائٹ کو مونیٹائز کروا کے بیچ رہے ہیں ۔

لیکن زیادہ تر لوگ انسٹنٹ آرٹیکلز کو اپنی ویب سائٹ پر مونیٹائز کرواکے ڈالر کما رہے ہیں ۔

اور جو لوگ مختلف قسم کی ٹرکس استعمال کر کے فیس بک پیجز پر انسٹنٹ آرٹیکل مونیٹائز

کرکے بیچ رہے ہیں ان میں زیادہ تر لوگ دھوکا دے رہے ہیں ۔

 

اگر آپ بالکل لیگل طریقے سے فیس بک سے پیسے کمانا چاہتے ہیں ۔ آپ کو کیا کرنا چاہیے

اگر آپ کے پاس کوئی پرانی ویب سائٹ ہے جس پر آپ پہلے سے ہی گوگل ایڈسینس کے

ذریعے پیسے کما رہے ہیں ۔ تو آپ گوگل ایڈسینس کے ساتھ اسی ویب سائٹ پر فیس بک

انٹرنٹ آرٹیکل کی مونیٹائزیشن اپروو کروا کر فیس بک سے بھی ڈالر کما سکتے ہیں ۔

میں نے نیچے ویڈیو میں دکھایا ہے کہ کس طرح کی ویب سائٹ پر کس طریقے سے

فیس بک کے اسسٹنٹ آرٹیکلز دیکھے جا سکتے ہیں اور کوئی سب کے ایڈز کیسے دیکھے جا سکتے ہیں ۔

 

یہاں آپ لوگوں کو یہ بھی بتانا چاہتا ہوں ۔ فیس بک انسٹنٹ آرٹیکلز آپ تب دیکھ سکتے ہیں

جب آپ موبائل پر فیس بک یوز کر رہے ہوتے ہیں ۔ جتنا زیادہ فیس بک سے آپ کو فائدہ

ہو سکتا ہے کتنا فائدہ آپ کو گوگل ایڈ سینس سے نہیں ہو سکتا ۔

جب آپ ویب سائٹ کو ڈائریکٹ گوگل سے یا پھر کمپیوٹر پر یا لیپ ٹاپ پر اوپن کریں گے ۔

آپ کو انسٹنٹ آرٹیکل نظر نہیں آئیں گے یہ اسسٹنٹ آرٹیکل صرف آپ کو فیس بک کے

ذریعہ موبائل پر دکھائے جاتے ہیں ۔ اس سے یہ بات واضح ہوجاتی ہے کہ آپ کو گوگل

سے یا کسی بھی دوسرے سرچ انجن سے فیس بک انٹرنٹ آرٹیکلز کے لیے وزٹر نہیں

چاہیے ۔ یہ وزٹر صرف فیس بک کے ذریعے آپ کے اسسٹنٹ آرٹیکل پر جا سکتے ہیں ۔

 

جتنی زیادہ ٹریفک اب آپ کو انسٹنٹ آرٹیکل پر مل سکتی ہے اتنی ٹریفک آپ کو گوگل

ایڈسینس کے لیے گوگل سے نہیں مل سکتی ۔

اور ایک اور بھی بات واضح ہو جانی چاہیے ۔

گوگل ایڈ سینس سے آپ کو جو ارننگ ہوتی ہے وہ تب ارننگ ہوتی ہے جب گوگل

ایڈسنس کے ایڈ پر لوگ کلک کرتے ہیں۔ لیکن فیس بک اسٹیٹ آرٹیکلز پر جو ارننگ

آپ کو ملتی ہے وہ تمام ارننگ امپریشنز کی ملتی ہے ۔

فیس بک انسٹنٹ آرٹیکلز کے لئے آپ کو کیا کیا چیزیں درکار ہیں ۔

انسسٹنٹ آرٹیکلز کے لیے آپ اپروول کیسے لے سکتے ہیں ؟

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.