میاواکی جنگل ،فضائی آلودگی کا خوبصورت حل ۔مفت معلومات

میاواکی جنگل ،فضائی آلودگی کا خوبصورت حل ۔مفت معلومات

میاواکی جنگل ،فضائی آلودگی کا خوبصورت حل      
دنیا جب سے ایک گلوبل ولیج بنی ہے تب سے گلوبل وارمنگ کا شکار ہے ۔پاکستان میں بھی فضائی آلودگی اب بہت بڑھ چکی ہے ۔

اس فضائی آلودگی کو کم کرنے ک لئے کبھی شجرکاری مہم کا اہتمام کیا جاتا تھا لیکن اب پچھلے کچھ سالوں سے اس میں بھی

لاپرواہی برتی جا رہی ہے جس کی وجہ سے فضا آلودہ سے آلودہ ہوتی جا رہی ہے اور اب سموگ انسانی زندگی کو بری طرح

متاثر کر رہی ہے  ۔ہمارے شہر پچھلے 4 سے 5 سالوں اس کا شکار ہیں ۔لاہور بھی اس فضا ئی آلودگی کا ایسا شکار ہوا کہ

باغوں کے اس شہر میں کھلی ہوا میسر نہ رہی سانس لینے کو بھی ،ایسے میں حکومت پاکستان نے شجرکاری مہم کا پورے

ملک میں  آغاز کیا ۔اور بڑے شہروں میں جہاں آلودگی بڑھ گئی تھی جنگل لگانے کا منصوبہ پیش کیا اور اس پر کام شروع کر

دیا اسی سلسلے کی ایک کڑی میاواکی جنگل ہے
لاہور میں سگیاں میں 9 اگست کو میاواکی اربن فورسٹ کا افتتاح وزیراعظم عمران خان نے کیا ،جو 100کنال اراضی پر مشتمل

ہے اس جنگل میں  ایک لاکھ ساٹھ ہزار پودے لگائے گئے ہیں اور مزید ابھی لگائے جائیں گے۔

وزیراعظم عمران خان کے بیان کے مطابق یہ ایشیا کا سب سے بڑا میاواکی جنگل ہو گا

جو ماحولیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے کیلئے اہم قدم ثابت ہو گا ۔
لاہور میں 51 سے زائد مقامات پر یہ جنگل لگائے گئے ہیں ۔لاہور جو کبھی خود باغوں

کا شہر رہا ہے شالیمار باغ ،جناح باغ اور دیگر ۔اب وہاں میاواکی جنگل بھی ملیں گے ۔
میاواکی ایک جاپانی طریقہ ہے جس میں کم جگہ پر زیادہ سے زیادہ درخت لگائے جاتے ہیں ۔
1-زمیں کو 4 فٹ تک گہرائی میں کھدائی کی جاتی ہے پھر اس میں بھالٹا لے کر چاول اور گنے کا فریش ایش

ڈال کر مکسچر تیار کیا جاتا ہے پھر فریش بھل کے ساتھ کور کر دیا جاتا ہے
2_اس میں کم سے کم وقفے پر درخت لگائے جاتے ہیں عام طور پر 4 سے 6 فٹ کا فاصلہ رکھا جاتا ہے لیکن

اس میں ڈیڑھ فٹ کا فاصلہ رکھا جاتا ہے تاکہ پودا بلکل سیدھا اگے ۔
میاواکی جنگل میں پودے عام درختوں کی نسبت 10 گنا تیزی سے بڑھتے ہیں اور تقریبا تین سال میں گھنا جنگل تیار ہو جاتا ہے ۔
اس کا آکسیجن ریٹ بھی زیادہ ہے جو فضائی آلودگی کو کم کرنے میں مدد دے گا ۔
اس فورسٹ کا درجہ حرارت جنگل سے باہر کے درجہ حرارت سے 10 گنا کم ہوتا ہے
لاہور میں یہ ماڈل کے طور پر لگائے جا رہے ہیں پھلوں اور سبزیوں کے ہزاروں درخت ہوں گے جو صرف

چند دنوں میں گھنے جنگل بن جائیں گے جن کا شہر کی فضا پر بھی اچھا اثر پڑے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.