میر و غالب سا نہ پروین سا شستہ لہجہ -مفت معلومات اردو شاعری

qandeel urdu poetry - muft malomat

میر و غالب سا نہ پروین سا شستہ لہجہ
ہم کو مطلوب ہے اپنا ہی نرالہ لہجہ

یوں نہ خاموش رہیں مجھ سے کریں گفت و شنید
مئے الفاظ کا طالب ہے یہ کاسہ لہجہ

بات میں رتی برابر بھی کوئی کھوٹ نہیں
میری سچائی کو کافی ہے حوالہ لہجہ

وقت رخصت تو یہ سمجھا کہ بہت خوش ہوں میں
میں نے اک کرب و اذیت سے سنبھالا لہجہ

سارے شکوے و شکایات مجھے بھول گئے
اتنا جامع و مدلل تھا مقالہ لہجہ

گھاؤ الفاظ کے بھرتے ہی نہیں قندیل ؔ
کیسے ہو سکتا ہے زخموں کا ازالہ لہجہ

Writer- Qandeel Asad

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.