مینار پا کستان ۔ ٹک ٹا کر عا ئشہ اکرم انسیڈنٹ ۔ مفت معلومات

Minar e pakistan Aisha akram incident

14 اگست مینارِ پاکستان پر پیش آنے والے واقعے نے ہمارے جذباتی پاکستانیوں کے دل دہلا کر رکھ دئیے پاکستانیوں کو پاکستانی ہونے پر شرم محسوس ہوئ اور ان 400 مردوں کو کئ گالیاں، کئ صلواتیں سنائ گئ.

بہت سے سیلبریٹز نے اس واقعہ کی مذمت کی جہالت کی انتہا کہا، یہاں تک کے جس کے گھر بیٹی نہیں انھوں نے بیٹی نہ ہونے پر شکر کیا اور پاکستان کو عورتوں کے لئیے ایک غیر محفوظ ملک قرار دیا. لیکن یہ تصویر کا ایک رُخ دیکھ کر دیئے جانے والا ردِعمل تھا اس لئیے یہاں میں نے جذباتی پاکستانیوں کا لفظ استعمال کیا ہے.

جیسا کہ ہر تصویر ہر پہلو کے دو رُخ ہوتے ہیں اسی طرح اس واقعے کے پیچھے چھپا ہوا دوسرا رُخ آپ کو بتاتے چلے کہ مینارِ پاکستان میں جس لڑکی کے ساتھ یہ واقعہ رونما ہوا وہ ایک ٹک ٹاکر ہے جس کا نام عائشہ اکرم ہے ان کا کہنا ہے وہ ویڈیو بنانے کے غرض سے وہاں گئ تھی لیکن ان کے ساتھ ایسا المناک واقعہ رونما ہوگیا ان کے بقول انہیں برہنہ کیا گیا اچھالا گیا زدوکوب کیا گیا ان کا کہنا ہے کہ ان کے جسم پے کوئ ایسی جگہ نہیں جہاں نشان ہو لیکن اس واقعے کے بعد ایک انکر کو اپنے ساتھ ہوئے سانحہ کی تفصیل بتانے والی وائرل ہونے والی ویڈیو میں ان کا چہرا، گردن اور ہاتھ واضح ہے اور ادھر کوئ ایک نشان بھی نظر نہیں آرہا اور بقول ان کے انہیں چار سو لوگوں نے ہراسا کیا لیکن پھر بھی ان کی گردن، چہرے یا ہاتھ پر کوئ نشان نہیں نہ کوئ میڈیکل ایشو بنا نہ کوئ میڈیکل رپورٹ بنی یہ سوچنے والی بات ہے.

دوسری طرف اس ٹک ٹاکر نے 14 اگست مینارِ پاکستان جانے سے ایک دن پہلے ٹک ٹاک پر اپنی ویڈیو اپلوڈ کی تھی جس میں یہ سب کو مینارِ پاکستان جانے کی اطلاع دینے کے ساتھ اپنے فینز کو آنے کی دعوت بھی دی. اس کے علاوہ 14 اگست کے بعد 15 اگست کو اس ٹک ٹاکرنے اپنے انسٹاگرام پر اپنی پک بھی ڈالی جن میں یہ بیٹھی مزے سے ہنس رہی تھی لیکن اگلے دو دن بعد ان کی نامعلوم آئ ڈی سے یہ حادثے والی ویڈیو وائرل ہوئ تو انہیں پتہ چلا ان کے ساتھ یہ حادثہ رونما ہوا تھا اور پھر اس ٹک ٹاکر نے اپنی عزت برباد ہونے پر سوشل میڈیا پر رونا ڈالا. میڈیا نے اس واقعے کو ہائ لائیٹ کیا تو 400 نامعلوم مردوں کے خلاف فائر درج کروائ گئ اور انصاف کی اپیل کی گئ. اس ویڈیو سے پہلے اس ٹک ٹاکر کے فولورز کم تھے لیکن ویڈیو وائرل ہونے کے بعد ان کے فولورز 1.7 ملیںن بڑھ گئے ہے.اس سے صاف ظاہر ہے کہ یہ سب پری پلین تھا آپ لوگوں کو یاد ہوگی ٹک ٹوکر مناہل ملک جو تین سال سے ٹک ٹوک بنا رہی تھی لیکن فیمس نہیں ہوسکی پھر اچانک اس کی نیوڈ پک وائرل ہوتی ہے تو وہ راتوں رات فیمس ہوکر جنت مرزا کے بعد دوسرے نمبر آگئ اسی طرح حریم شاہ بھی فیمس ہوئ اب اس ٹک ٹوکر عائشہ اکرم کی سٹوری بھی زیادہ مختلف نہیں.

ان کچھ ٹک ٹاکر کے فیمس ہونے کے پروپیگنڈوں نے پاکستان کو ایسے ہی بدنام کر رکھا ہے..

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.