ڈی جی خان حادثہ بدقسمت حادثے میں 34 کے قریب افراد جاں بحق ہو گئے۔ مفت معلومات

ڈی جی خان حادثہ
عید جو کہ اپنے ساتھ خوشیاں لے کر آتی ہےاور پردیسی اپنے گھروں کو لوٹتے ہیں کہ ان خوشیوں میں اپنے گھروالوں کے ساتھ شریک ہو سکیں

مل بیٹھ سکیں مگر راجن پور جانے والی بس کے مسافروں کی قسمت میں عید کی خوشیاں نہیں تھیں
-مسافروں سے بھری بس جو سیالکوٹ سے راجن  پور جا رہی تھی انڈس ہائی وے تونسہ روڈ پر جھوک یارشاہ کے

قریب ٹرالر سے ٹکرا گئی اور قلابازیاں کھاتی کچلی گئی
بس میں تقریبا 75 افراد سوار تھے جن میں سے 15 افراد بس کی چھت پر سوار تھے اور50 کےقریب  بس میں

-اس بدقسمت حادثے میں 34 کے قریب افراد جاں بحق ہو گئےاور 40 زخمی ،جن میں سے کافی زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے

– اس سانحے کا شکار زیادہ تر مسافرمزدور پیشہ تھے جو مختلف شہروں میں روزگار کے لیے گئے تھے اور

اب عید پر اپنے گھروالوں سے ملنے واپس آ رہے تھےمگر موت نے انہیں مہلت نہیں دی۔
اس حادثے میں میں کوٹلہ شیر محمد (راجن پود)کے ایک ہی گھر کے چار بھائی حادثے کا شکار ہوئے جن میں

سے تین جاں بحق اور ایک شدید زخمی ہے ان کے گھروالوں کا کہنا ہے کہ ہم غریب لوگ ہیں

چاروں بھائی سیالکوٹ میں مزدوری کرتے تھے 2 بھائیوں کی عید کے بعد شادی تھی
پولیس امدادی ٹیموں اورریسکیو کی مدد سےحادثے کے زخمیوں  کو ڈی جی خان کے ٹیچنگ ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے

اور ایمرجنسی نافذ کر دی ہے ڈیڈباڈیز کو شناخت کر کے لواحقین کے حوالے کیا جا رہا ہے
حادثہ متعلقہ افراد کی غفلت اور بس میں ضرورت سے زیادہ مسافر ہونے کی بنا پر پیش آیا-

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.